امام احمد رضا کے استاذ الاساتذہ، سراج الہند حضرت شاہ عبد العزیز محدث دہلوی --پہلی قسط

Abstract خلاصہ

عبدالعزیز کی پیدائش ،تاریخی نام ہے۔ آپکا سلسلہ ۳۴واسطوں سے عمر فاروق تک ، بچپن ہی میں قرآن کریم حفظ کرنے ،علوم عقلیہ ونقلیہ اور کمالات ظاہری وباطنی سے فراغت حاصل کرنے اور بعض کتب حدیث کی سند اپنے والد کے تلامذہ سے لینے کا ذکر، بیعت ،کشف باطن ،برصغیر پاک ہند میں علوم اسلامیہ تفسیر وحدیث کا چرچا ہونے،سرسید نے جو لکھا وہ مقالے میں شامل ہے۔ عبدالعزیزکے تلامذہ و تصانیف کے چند نام ،آپکی تالیفات وتحریفات،اولاد ووفات،مسلک استعانت ،اہل قبور سے استمداد اور وسیلہ عظمیٰ کا تذکرہ مقالے میں موجود ہے۔ جس سے پتہ چلا ،عبدالعزیز تمام علوم ظاہری وباطنی کے جامع ،زہدوتقویٰ اوراللہ تعالیٰ کی نشانیوں میں سے ایک ہیں۔

Author/Editor مصنف ؍ مرتب

Publication Date تاریخ اشاعت

Format

Language

Identifier

264

Journal Name

Volume

Issue

Page Range

18-25

Files

18-25.pdf

Citation

خلیل احمد رانا, “امام احمد رضا کے استاذ الاساتذہ، سراج الہند حضرت شاہ عبد العزیز محدث دہلوی --پہلی قسط,” Research Network رابطہ تحقیق, accessed August 14, 2018, http://research.net.pk/items/show/264.

Social Bookmarking

Position: 305 (28 views)