بانی منظر اسلام اور تحریک اصلاح ندوہ --پہلی قسط

Abstract خلاصہ

مولانا ایک عظیم مفکر اسلام ہیں،جنہوں نے عالم اسلام کو اعلیٰ قیادت سے نوازا ہے ۔ تحریک اصلاح ندوہ میں امتیازی شان سے جلوہ گرہوتے ہیں۔ مدرسہ فیض عام کانپور کے سالانہ جلسہ دستاری بندی میں مدارس اسلامیہ کے نصاب کی اصلاح ندوہ العلماء کے قیام کا علان کرنے ،جس میں علی مونگیری ناظم لطف اللہ صدر منتخب ہوئے اس اجلاس میں غیرمقلدوں ،رافضیوں ،نیچریوں اور دیوبندیوں نے شرکت کرکے ندوۃ العلماء کے انتظامیہ میں شامل ہونے اور اہل حق کیلے خطرہ بنے اس خطرے کا احساس علماء حق کو ہونے انکے الفاظ مقالے میں شامل ہیں ۔ مولانا کا اس اجلاس میں اصلاح نصاب پر ایک مقالہ پٓڑھنے ، علماءاہلسنت فضل الرحمٰن نے گمراہ کن نظریات کی سخت مخالفت کی ابوالحسن لکھنو اجلاس ندوہ میں شرکت اور ماحول سے مطمئن نہ ہونے اسکا اظہار مولانا کے نام اپنے خط میں کرنے ،محدث سورتی نے لکھنواجلاس میں شرکت کرنے تحریک ندوۃالعلماءسے علیحدہ ہونے ،فضل الرحمٰن کے وصال مکتوبات علماءوکلام اہل صفا کے مجموعہ کے شائع ہونے جس میں دوسو علماء ومشائخ ومفکرین ،صالحین کے خطوط مولانا کے نام وصول ہونےکا تذکرہ مقالے میں شامل ہے۔ جس سے پتہ چلا ان مکتوبات کو پڑھ کر اصلاح ندوہ کے سلسلے میں مولانا کی اعلیٰ رہبری وبے مثال خدمات کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔

Author/Editor مصنف ؍ مرتب

Publication Date تاریخ اشاعت

Format

Language

Identifier

207

Journal Name

Volume

Issue

Page Range

16-17

Files

16-17.pdf

Citation

سرتاج حسین رضوی، ڈاکٹر, “بانی منظر اسلام اور تحریک اصلاح ندوہ --پہلی قسط,” Research Network رابطہ تحقیق, accessed July 15, 2018, http://research.net.pk/items/show/207.

Social Bookmarking

Position: 218 (30 views)