تعمیر شخصیت اور تربیت اولاد کا اسلامی نفسیاتی ماڈل، تعلیمات امام احمد رضا کی روشنی میں

Abstract خلاصہ

مولانا فکرصحیح کے مالک ہی نہیں بلکہ محافظ وداعی تھے،بچوں کی تعلیم وتربیت سے متعلق انکے نظریات نہایت واضح ومفید ہیں۔ انہوں نے تعلیم کامحور دین اسلام کو اور اسکا بنیادی مقصد خدارسی و رسول شناسی کو قرار دیا۔ انکی تعلیمات کی روشنی میں اولاد کی تربیت واسکی شخصیت کی تعمیر کااسلامی نفسیاتی ماڈل کیا ہونا چاہیے؟مقالے اسکا خاکہ پیش کیا گیا ہے،جس کی بحث مضمون کا تعلق ابتدائی عمر کی تربیت سے ہے جو تعمیر شخصیت کیلے سب سے زیادہ اہمیت رکھتا ہے۔ مولانا کے ماڈل کے حوالے سے بچپن تک کے مراحل کی تربیت کا قدرے تفصیل سے ذکر اورمزید اہم نکات پیش کیے گئے ہیں۔ جس سے پتہ چلتا ہے قرآن وحدیث کی روشنی میں مولانا کے پیش کردہ نکات بچوں کی نشوونما وتربیت کے طورپر اپنائے جاسکتے ہیں۔ شخصیت کی تعمیرکے حوالے سے دو اہم ترین عوامل ذکرہیں۔اسلامی روشنی میں مولانا نے فتاویٰ رضویہ میں ایک صدی قبل کیا وہ اور تعلیمات نبوی کی روشنی میں اولاد کی تعمیر شخصیت کے حوالے سے شادی سے قبل حق اولاد کا پیریڈ بھی وہاں خصوصی شامل کیا ہے۔ جس سے تعمیر شخصیت کے حوالے سے پیش نظر رکھا جائے تو زیادہ بہتر تعمیر شخصیت کے نتائج کی توقع ہوگی ۔

Author/Editor مصنف ؍ مرتب

Publication Date تاریخ اشاعت

Format

Language

Identifier

177

Journal Name

Volume

Issue

Page Range

77-83

Files

077-083.pdf

Citation

سلیم اللہ جندراں، ڈاکٹر, “تعمیر شخصیت اور تربیت اولاد کا اسلامی نفسیاتی ماڈل، تعلیمات امام احمد رضا کی روشنی میں,” Research Network رابطہ تحقیق, accessed January 23, 2018, http://research.net.pk/items/show/177.

Item Relations

This item has no relations.

Social Bookmarking

Position: 106 (28 views)