اما م المحدثین احمد رضا خا ں قا دری

Abstract خلاصہ

مولانا اپنے عہد کے جلیل القدرعالم و محدث تھا۔۵۴علوم و فنون کا خود مولانا نے ذکر کیاہے،جن میں انکو تجرحاصل تھا۔علم و حدیث میں تجر کا اندازہ انکی بیشتر رسائل وفتاویٰ سے لگایا جاسکتا ہے۔ مولانا نے جن علماءسے سند حدیث حاصل کی انکے نام مقالے میں شامل ہیں۔انکی نظر اقسام حدیث وکتب حدیث پر تھی۔ حنیف رضوی نے ایسی۴۰۰سے ذیادہ کتب حدیث دریافت کیں جن سے مولانا نے استفادہ کیا۔ ڈاکٹرطفیل،محدث کچھوچھوی،مولانا رحمٰن علی مہاجر مکی،کے مولانا کے بارے میں اقوال مقالے میں شامل ہیں۔مولانا نےسجدہ تعظیمی کی حرمت میں اپنے رسالے میں چالیس احادیث جمع کردی ہیں۔ جس سے مولانا کی علم حدیث میں وسعت نظر کا اندازہ لگایا جاسکتا ہے۔ مولاناکی کوئی بات وکام ،کوئی تحریرحدیث کے خلاف نہ تھی۔ انکی شاعری میں بھی اکثر اشعار احادیث کی ترجمانی کرتے نظر آنے کا تذکرہ مقالے میں شامل کیاگیا ہے۔علامہ ظفرالدین نے اپنی کتاب جامع الرضوی جلد دوم مطبوعہ حیدرآباد سندھ کے مقدمے میں مولانا کے افادات کا ذکر کیا، اس مقالے میں وہ مقدمہ موجود ہے۔

Author/Editor مصنف ؍ مرتب

Publication Date تاریخ اشاعت

Format

Language

Identifier

168

Journal Name

Volume

Issue

Page Range

23-31

Files

023-031.pdf

Citation

مسعود احمد، پروفیسر ڈاکٹرمحمد, “اما م المحدثین احمد رضا خا ں قا دری,” Research Network رابطہ تحقیق, accessed April 25, 2018, http://research.net.pk/items/show/168.

Item Relations

This item has no relations.

Social Bookmarking

Position: 307 (20 views)